Hassan Ali wrong directions 23

بیٹرز کو غلط اشارہ کیوں کیا؟ آئی سی سی نے حسن علی کی سرزنش کردی

دبئی: بنگلا دیشی بلے باز کو غلط اشارہ کرنا فاسٹ بولر حسن علی کو مہنگا پڑگیا۔

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق جمعے کو ڈھاکہ میں بنگلا دیش کے خلاف پہلے ٹی 20 کے دوران ضابطہ اخلاق کے لیول ون کی خلاف ورزی کرنے پر پاکستانی فاسٹ باؤلر حسن علی کو سرزنش کی گئی۔

بین الاقوامی میچ میں حسن علی نے آئی سی سی ضابطہ اخلاق کے آرٹیکل 2.5 کی خلاف ورزی کی، جس کا تعلق “زبان، حرکات یا اشاروں کے استعمال سے ہے جو توہین آمیز یا کسی بلے باز کی طرف سے جارحانہ ردعمل کو بھڑکانے کا سبب بھی بن سکتا ہے۔

آئی سی سی کے مطابق حسن علی کو ایک ڈی میرٹ پوائنٹ بھی دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ یہ واقعہ بنگلہ دیش کی اننگز کے 17ویں اوور میں پیش آیا، جب حسن علی نے بنگلا دیشی بلے باز نورالحسن کو وکٹ کے پیچھے کیچ آؤٹ کرنے کے بعد انہیں نامناسب طریقے سے پویلین واپس جانے کا اشارہ کیا ۔

دوسری جانب بنگلا دیش کے خلاف دوسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں حسن علی کو آرام دیا گیا ہے جبکہ شاہین شاہ آفریدی کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں